Home / News / مظفرگڑھ ، حفاظتی بند میں شگاف پڑنے سے دریائے چناب کا سیلابی پانی آبادیوں میں داخل،ریلوے کالونی‘ بھٹہ پور‘ جیسلورھن‘ ماہڑہ نشیب‘ طاہروری‘ بھٹہ والی‘ فضل نگر‘ شادمان کالونی و دیگر آبادیوں کو خالی کرالیا گیا

مظفرگڑھ ، حفاظتی بند میں شگاف پڑنے سے دریائے چناب کا سیلابی پانی آبادیوں میں داخل،ریلوے کالونی‘ بھٹہ پور‘ جیسلورھن‘ ماہڑہ نشیب‘ طاہروری‘ بھٹہ والی‘ فضل نگر‘ شادمان کالونی و دیگر آبادیوں کو خالی کرالیا گیا

مظفرگڑھ(مظفر گڑھ ڈاٹ سٹی۔14ستمبر۔2014ء) مظفرگڑھ سے بارہ کلومیٹر دور قصبہ ٹھٹھہ سیالاں کے قریب حفاظتی بند میں شگاف پڑجانے سے دریائے چناب کا سیلابی پانی آبادیوں میں داخل ہوگیا اور پانی تیزی سے مظفرگڑھ شہر کی طرف بڑھنے لگا جس سے مظفرگڑھ شہر کو شدید خطرہ لاحق ہوگیا‘مظفرگڑھ شہر میں ہائی الرٹ جاری کردیا گیا‘ ریلوے کالونی‘ بھٹہ پور‘ جیسلورھن‘ ماہڑہ نشیب‘ طاہروری‘ بھٹہ والی‘ فضل نگر‘ شادمان کالونی و دیگر آبادیوں کو خالی کرالیا گیا ہے۔لوگوں میں شدید خوف و ہراس پایا جاتا ہے۔ مظفرگڑھ شہر کو خالی کرانے کیلئے مساجد میں اعلانات کرادئیے گئے جس سے شہریوں میں پریشانی بڑھ گئی ہے۔ شہریوں نے سامان محفوظ مقام پر منتقل کرنا شروع کردیا ہے۔قصبہ مراد آباد بھی خالی ہوگیا ہے۔ قصبہ کے تین اطراف میں سیلابی پانی بہہ رہا ہے۔ تلیری کینال میں چار مقامات پر شگاف پڑ گیا ہے جس سے نزدیکی آبادیاں زیر آب آگئی ہیں۔مانک پور حفاظتی بند میں شگاف سے سیلابی پانی نے مظفرگڑھ شہر کا رخ کرلیا جبکہ لوگوں کے مکانات بھی پانی میں ڈوب گئے ہیں۔ سیلابی پانی کی تباہ کاریوں سے سینکڑوں لوگ متاثر ہوئے ہیں۔ کالی پلی کے نزدیک حفاظتی بند میں شگاف کے باعث سیلابی پانی تیزی سے آبادیوں کی طرف بڑھ رہا ہے جس سے ایم ایم روڈ پر واقع قصبہ خانپور بگا شیر کو شدید خطرہ لاحق ہے جبکہ جھنگ مظفرگڑھ روڈ بھی زیر آب آگئی ہے۔ لوگ انتہائی پریشانی کے عالم میں محفوظ مقامات کی طرف بھاگ رہی ہیں۔ مظفرگڑھ شہر میں ہائی الرٹ جاری کردیا گیا ہے۔ سرکاری دفاتر کا ریکارڈ بھی ہنگامی بنیادوں پر محفوظ بنایا جارہا ہے۔

Loading...
%d bloggers like this: