Breaking News
Home / News / مظفرگڑھ، پاکستان کا سب سے بڑا کھجوروں کا قدیمی باغ انتظامیہ کی نااہلی کی وجہ سے تباہ ہونے لگا

مظفرگڑھ، پاکستان کا سب سے بڑا کھجوروں کا قدیمی باغ انتظامیہ کی نااہلی کی وجہ سے تباہ ہونے لگا

مظفرگڑھ ۔ (مظفر گڑھ ڈاٹ سٹی۔ 16 جنوری2019ء) مظفرگڑھ میں ضلع کونسل مظفرگڑھ کی ملکیت 447 کنال رقبہ پر مشتمل پاکستان کا سب سے بڑا کھجوروں کا قدیم اور تاریخی باغ انتظامیہ کی عدم توجہ اور نااہلی کی وجہ سے تباہ ہونے لگا، ضلع کونسل کو سالانہ لاکھوں روپے آمدن دینے والا نایاب نسل کی کھجوروں کا باغ گندگی کی وجہ سے کچرا کنڈی کا منظر پیش کرنے لگا ہے، جبکہ باغ کے اطراف چار دیواری نہ ہونے کی وجہ سے قریبی مکینوں کی جانب سے سیوریج کا گندہ پانی باغ میں چھوڑنے کی وجہ سے باغ میں گندے پانی کے جوہڑ بن گئے ہیں، کھجور مظفرگڑھ کا روائتی پھل اور مظفرگڑھ کی پہچان ھے ضلع کونسل کے کھجوروں کے اس تاریخی باغ میں کھجوروں کی ایسی نایاب نسل کے درخت ھیں جو شائد پاکستان میں کہیں اور نہ ھوں اس باغ سے ضلع کونسل کو لاکھوں روپے سالانہ آمدنی ھوتی ھے اس کے علاوہ یہ باغ ایک ثقافتی اور تاریخی حیثیت کا بھی حامل ھے لیکن ضلع کونسل کے کارپردازوں نے اس کی طرف سے مجرمانہ غفلت اختیار کی ھوئی ھے اور ضلعی انتظامیہ نے بھی چپ سادھ رکھی ھے کچھ عرصہ قبل تک شہر کے لوگ فارغ اوقات میں یہاں سیروتفریح کیلئے آتے تھے لیکن اب باغ کی موجودہ صورتحال کی وجہ سے کوئی شہری ادھر کا رخ نہیں کرتا اگر کچھ عرصہ مزید باغ کی حالت سدھارنے پر توجہ نہ دی گئی تو شائد ضلع کونسل اس سے حاصل ھونے والی آمدنی سے محروم ھو جائے اور مظفرگڑھ کی یہ خوبصورت تاریخی اور ثقافتی پہچان مکمل طور پر تباہ ھو جائے۔
Loading...
%d bloggers like this: