Breaking News
Home / News / 2 معصوم بچیوں کا زندہ جلا کر بے رحمانہ قتل، والد ہی قاتل نکلا

2 معصوم بچیوں کا زندہ جلا کر بے رحمانہ قتل، والد ہی قاتل نکلا

مظفرگڑھ (مظفرگڑھ ڈاٹ سٹی ۔ 23 جنوری2021ء) چند روز قبل تھانہ قریشی کے علاقہ میں 2 معصوم بچیوں کا زندہ جلا کر بے رحمانہ ، سسرالیوں نے نہیں بلکہ خود والد ہی سفاک قاتل نکلا، ظالمانہ طریقے سے قتل کرنے کے بعد خود ہی مدعی بن کر سسرالیوں کیخلاف مقدمہ درج کرادیا تھا، ملزم نے اپنے جرم کا اعتراف کرلیا، ڈی پی او محمد حسن اقبال کیطرف سے ڈی ایس پی صدر سرکل کیلئے 1 لاکھ، انسپکٹر حسن طاہر تفتیشی افسر مقدمہ اور ایس ایچ او تھانہ چوک قریشی کامران سیف کیلئے 20/20 ہزار نقد انعام کا اعلان، ایس پی انوسٹی گیشن جاوید احمد خان کی تھانہ میں پریس کانفرنس۔
مظفرگڑھ کے تھانہ قریشی میں کیس کے حوالے سے ایس پی انوسٹی گیشن جاوید احمد خان نے ڈی ایس پی صدر فاروق احمد خان و دیگر افسران کے ہمراہ پریس کانفرنس کی، ایس پی انوسٹی گیشن کا کہنا تھا کہ 7 جنوری کو چوک قریشی میں گھر میں سوئی ہوئی ڈیڑھ سالہ عروہ اور 3 سالہ اسوہ کو پٹرول چھڑک کر آگ لگادی گئی تھی، بچیوں کے والد حافظ عبدالحمید نے خود مدعی بن کر اپنی تیسری بیوی کے اہلخانہ سسر سمیت 5 افراد کیخلاف قتل اور دہشتگردی کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کرادیا،ایس پی انوسٹی گیشن جاوید احمد خان کیمطابق جدید طریقے سے تفتیش کے بعد بچیوں کے والد عبدالحمید کو حراست میں لیکر تفتیش کی گئی،ان کا کہنا تھا کہ بچیوں کے گرفتار والد نے اعتراف کیا ہے کہ اس نے بچیوں کی رضائی پر پٹرول چھڑک کر کوئلوں سے بھری انگیٹھی بچیوں پر انڈیل دی تھی، ملزم اپنی تیسری بیوی کے اہلخانہ یعنی اپنے سسرالیوں کو پھنسانا چاہتا تھا، 7 جنوری کو قتل کے بعد باپ نے اپنے سسرالیوں کیخلاف تھانہ قریشی میں قتل کا مقدمہ درج کروادیا تھا جبکہ ملزم کا اپنے اعترافی بیان میں کہنا تھا کہ سسرالیوں کو پھنسانے کیلئے اس نے خود ہی اپنی سوتی ہوئی دو معصوم بچیوں پر پٹرول چھڑک کر آگ لگادی تھی، پولیس نے سفاک والد کو گرفتار کر کے دہشت گردی عدالت سے 5 روزہ جسمانی ریمانڈ بھی حاصل کرلیا۔

Loading...
%d bloggers like this: