Home / News / مظفرگڑھ میں جڑواں بہنوں نے خودکشی کر لی

مظفرگڑھ میں جڑواں بہنوں نے خودکشی کر لی

مظفرگڑھ (مظفر گڑھ ڈاٹ سٹی۔5 فروری 2020ء) مظفرگڑھ میں جڑواں بہنوں نے لڑائی جھگڑے کے بعد خودکشی کر لی۔تفصیلات کے مطابق مظفر گڑھ کی تحصیل علی پور میں ایک افسوسناک واقعہ پیش آیا ہے جہاں جڑواں بہنوں نے خودکشی کر لی۔بتایا گیا کہ فتح پور جنوبی میں 16 سالہ جڑواں بہنوں طاہرہ اور سمیرا میں جھگڑا ہوا،جھگڑے کے بعد دلبرداشتہ ہو کر دنوں بہنوں نے زرعی سپرے پی کر خودکشی کر لی۔پولیس کا کہنا ہے کہ دونوں بہنوں کو تشویشناک حالت میں ٹی ایچ کیو اسپتال علی پور منتقل کیا گیا جہاں وہ دم توڑ گئیں۔حکام کا کہنا ہے کہ جڑواں بہنوں کی لاشوں کو پوسٹ مارٹم کے لیے اسپتال منتقل کر دیا گیاہے جب کہ واقعے کی تحقیقات شروع کر دی گئی ہیں۔خیال رہے گذشتہ سال مظفرگڑھ میں ہی ایک افسوسناک واقعہ پیش آیا تھا جہاں دو بہنوں میں سے ایک نے مسلسل زیادتی اور بلیک میلنگ سے تنگ آکر اور بدنامی کے خوف سے خود کشی کر لی۔نواحی علاقہ بھٹہ پور میں تین اوباش لڑکوں نے دو سگی بہنوں سے زیادتی کر کے قابل اعتراض فلم بنا ئی اور بلیک میلنگ شروع کردی جس سے تنگ آ کر ایک لڑکی نے زہر پی کر خودکشی کر لی ۔ صدر پولیس مظفرگڑھ نے دو ملزمان کو پکڑ لیا۔بتایا گیا کہ نواحی بستی چڑھوئے والا موضع بھٹہ پور مظفرگڑھ کے رہائشی امیر بخش کی دو جوان لڑکیوں بھپی اور بانو عرف بنی سے علاقہ کے تین اوباش لڑکوں آصف،شیراز اور ساجد نے زیادتی کی اور اس فعل کی ویڈیو بنالی. بعد ازاں ویڈیو فلم نیٹ پر ڈال کر پورے علاقہ میں بدنام کرنے کی دھمکی دے کر بلیک میل کر کے انہیں مسلسل زیادتی کا نشانہ بناتے رہے جس سے تنگ آ کر چھوٹی لڑکی بھپی نے چند روز قبل زہر پی لیا جسے نشتر ہسپتال لے جا گیا جہاں وہ دم توڑ گئی جس کی ہفتہ کے روز قل خوانی کی گئی لڑکی کے زہر پینے کے بعد لڑکیوں کے والدین کو اس قیامت خیز واقعہ کا علم ہوا جس کی اطلاع پولیس تھانہ صدر مظفرگڑھ کو دی گئی جس نے دو ملزمان ساجد اور آصف کو حراست میں لیا تھا۔پولیس نے لڑکیوں کے والد امیر بخش کی مدعیت میں مقدمہ درج کیا تھا۔

Loading...
%d bloggers like this: