Breaking News
Home / News / صحافیوں کے خلاف اغوا کا مقدمہ درج کرنے پر ڈسٹرکٹ پریس کلب مظفرگڑھ کے وفدکی پولیس افسران سے ملاقات

صحافیوں کے خلاف اغوا کا مقدمہ درج کرنے پر ڈسٹرکٹ پریس کلب مظفرگڑھ کے وفدکی پولیس افسران سے ملاقات

مظفرگڑھ۔ (مظفر گڑھ ڈاٹ سٹی۔ 19 جنوری2019ء) تھانہ خان گڑھ پولیس کی طرف سے الیکٹرانک میڈیا خان گڑھ کے صحافیوں کے خلاف اغوا کا مقدمہ درج کرنے پر ڈسٹرکٹ پریس کلب مظفرگڑھ کے وفد نے خان گڑھ کے صحافیوں کے ہمراہ ضلع پولیس کے افسران سے ملاقات کی اور انہیں مقدمہ کے بارے میں حالات سے آگاہ کیا جبکہ انکوائری آفیسر ڈی ایس پی صدر سرکل مظفرگڑھ غضنفر تنگوانی کو جھوٹے اور بے بنیاد مقدمہ کے اہم ثبوت بھی فراہم کیے گئے۔اپنے اغوا کا جھوٹا ڈرامہ رچانے والی خاتون شائشتہ کی طرف سے 12 اکتوبر کو علاقہ مجسٹریٹ کے سامنے پیش ہوکر درالامان بھیجنے کے بیان اور خان گڑھ پولیس کی طرف سے خاتون کو جنرل بس اسٹینڈ سے برآمد کرکے تھانہ میں رپٹ لگانے کی حسب ضابطہ کاپی بھی فراہم کی گئی جبکہ خاتون اور اسکے والد کے بیانات میں کہیں بھی کسی صحافی کا نام شامل نہ کیا گیا تھا لیکن بعد ازاں سیاسی دبائو اور انتقامی کارروائی کرتے ہوئے جان بوجھ کر مقدمہ میں تین صحافیوں عامر سانگی، رانا اشفاق اور علی رمضان کو شامل کردیا، جبکہ مقدمہ کی بنائی جانیوالی جھوٹی کہانی میں خود ساختہ اغوا کا ڈرامہ رچانے والی لڑکی کی طرف سے مقدمہ میں اپنے والد کو گواہ بنایا اور بیان دیا کہ والد نے 9 اکتوبر کو اغوا کے وقت میرے والد نے ملزمان کے ساتھ مزاحمت کی، دلچسپ امر یہ ہے کہ جھوٹے مقدمہ کی کہانی کا بھانڈا یہیں پھوٹ گیا کہ لڑکی کا والد وقوعہ کے وقت دبئی تھا جو دوسرے روز 10 اکتوبر کو واپس آیا تھا اسی طرح 9 اکتوبر کو اپنے اغوا کا الزام لگانے والی لڑکی شائشتہ نے 12 اکتوبر کو مجسٹریٹ کے سامنے اپنے اغوا نہ ہونے اور اپنے گھر والوں سے جان کے خطرہ کا بیان بھی ریکارڈ کرایا تھا۔صحافیوں کے وفد نے پولیس آفیسر کو تمام ثبوت فراہم کرنے کے بعد منصفانہ اور آزادانہ میرٹ پر انکوائری کرنے کے لیے اپنے بھرپور تعاون کی یقین دہانی کرائی ہے۔
Loading...
%d bloggers like this: