Home / News / بنیادی مرکز صحت چنجن میں طبی عملے کی مبینہ غفلت سے نومولود جاں بحق، ورثا کا احتجاج کاروائی کا مطالبہ

بنیادی مرکز صحت چنجن میں طبی عملے کی مبینہ غفلت سے نومولود جاں بحق، ورثا کا احتجاج کاروائی کا مطالبہ

مظفرگڑھ (مظفرگڑھ ڈاٹ سٹی۔ 04 نومبر2019ء) مظفرگڑھ کی تحصیل میں طبی عملے کی مبینہ غفلت سے نومولود جاں بحق، ورثا کا احتجاج کاروائی کا مطالبہ ۔

تفصیل کے مطابق کے قصبہ بیٹ نبی شاہ کا رھائشی محمد راشد اپنی بیوی کو ڈیلیوری کیلئے بنیادی مرکز صحت چنجن لے گیا محمد ارشد کے مطابق ھسپتال میں کوئی ڈاکٹر اور طبی عملہ موجود نہ تھا صرف ایک ایل ایچ وی تانیا بیٹھی ھوئی موبائل فون پر مصروف تھی جس نے ایمبولینس کے ڈرائیور اور ھمارے کہنے کے باوجود مریضہ پر کوئی توجہ نہ دی بار بار کی منت سماجت پر ایک گھنٹے کے بعد اس نے مریضہ کو ڈرپ لگائی اور ایک کمرے میں جاکر سو گئی بار بار بلانے کے باوجود اس نے پھر مریضہ کو ایٹینڈ نہیں کیا مریضہ نے تڑپ تڑپ کر ایک بیٹے کو جنم دیا لیکن مریضہ کا خون بچے کے منہ میں چلے جانے سے بچہ 40 منٹ بعد فوت ہوگیا مریضہ کے لواحقین کے احتجاج پر ایل ایچ وی نے بچے کو پہلے سے مردہ قرار دے کر مریضہ اور لواحقین کو ھسپتال سے نکال دیا مریضہ کے لواحقین نے ھسپتال کے باھر احتجاج کیا اور وزیر صحت پنجاب اور ایگزیکٹو ڈسٹرکٹ ھیلتھ آفیسر سے ایل ایچ وی کے رویے کا نوٹس لے کر کاروائی کا مطالبہ کیا
Loading...
%d bloggers like this: